Tag Archives: cricket diplomacy

Shiraz Hassan on cricket diplomacy

کرکٹ ڈپلومیسی، تنازعات کے پرامن حل کا عزم

پاکستان اور بھارت کی تریسٹھ سالہ تاریخ تنازعات کی ایک لمبی داستان ہے۔ دونوں ممالک کے تعلقات اس دوران کئی بات انتہائی کشیدگی کا شکار بھی رہے۔ قیام پاکستان اور ہندوستان کی انگریز حکومت سے آزادی کے بعد سے ہی دونوں ممالک کے مابین اعتماد کی فضا قائم نہ ہو سکی۔ اس ضمن میں دونوں ممالک کے مابین پہلا معرکہ 1948ءمیں کشمیر کے محاذ پر ہوا۔ جس کے بعد حالات مزید کشیدگی کی جانب مائل ہوتے گئے۔ 1965ءمیں ایک بار پھر دونوں ممالک کے افواج آمنے سامنے آئیں۔ 65ءکی جنگ کو ابھی چند ہی برس بیتے تھے کہ پاکستان کو 1971ءکے سانحے کا سامنا کرنا پڑا۔ اس جنگ میں پاکستان کو شکست کا خمیازہ دولخت ہونے کی صورت میں بھگتنا پڑا۔ پاک بھارت کے درمیان 1999ء میں کارگل کے محاذ پر بھی فوجیں آمنے سامنے آئیں اور حالات روایتی جنگ کے آغاز کے دہانے تک آپہنچے۔ البتہ موجودہ دور میں ممالک کے سرحدی علاقے اس وقت خاموش ہیں اور امن کی فضاء تیزی سے فروغ پا رہی ہے گویا دونوں ممالک کے سیاسی و دفاعی ماہرین نے تناو ¿ بھرے ماضی سے یہ سبق سیکھ لیا ہے کہ ”جنگ سے نہیں بلکہ امن سے ترقی ممکن ہے۔ “
پاکستان اور بھارت کے سفارتی تعلقات کے استحکام اور امن کے فروغ کے لئے کرکٹ کا کردار بھی نہایت اہم رہا ہے۔ ورلڈ کپ 2011ءمیں دونوں ٹیمیں موہالی کے میدان میں سیمی فائنل میچ میں آمنے سامنے آئیں ۔ پاکستان اور بھارت کی کرکٹ ٹیموں نے 2008ءمیں ہوئے ممبئی حملوں کے بعد ایک دوسرے کے مدمقابل نہیں کھیلا تھا۔ ان دہشت گرد حملوں میں کم و بیش ایک سو پچاس سے زائد افراد ہلاک ہوئے تھے اور بھارت کی جانب سے ان حملوں کے لئے پاکستان کو ذمہ دار ٹھہرایا گیا تھا۔ ممبئی حملوں کے بعد پاکستان اور بھارت کے درمیان تعلقات ایک بار پھر سخت کشیدہ ہوگئے تھے جس میں وقت گزرنے کے ساتھ کمی آئی ہے تاہم بھارتی وزیراعظم من موہن سنگھ کی جانب سے وزیراعظم گیلانی کو موہالی میں میچ دیکھنے کی خصوصی طور پر دعوت دی گئی جسے وزیراعظم نے قبول کیا اور اس عزم کے ساتھ موہالی پہنچے کہ ان کا یہ اقدام نہ صرف پاکستان بھارت کے درمیان پیدا شدہ کشیدگی کو کم کرنے بلکہ خطہ میں مستقل امن و استحکام کے لئے بھی معاون ثابت ہوگا۔ وزیر اعظم گیلانی اور بھارتی وزیراعظم من موہن سنگھ نے ایک ساتھ میچ دیکھا اور مختلف امور پر تبادلہ خیال بھی کیا۔ میچ کے بعد وزیراعظم گیلانی نے خصوصی عشائیے میں بھی شرکت کی جسے پاکستان بھارت کے درمیان بہتر تعلقات کے استحکام اور تنازعات کے حل کی جانب Continue reading Shiraz Hassan on cricket diplomacy