Ae Shareef Insanon – Sahir Ludhianvi Talks to Those Who Are Still Sane in India and Pakistan

Ae Shareef Insanon

(Sahir Ludhianvi)

khoon apna ho ya paraya ho,
nasl-e-adam ka khoon hai aakhir;

jang mashriq mein ho ya maghrib mein,
aman-e-alam ka khoon hai aakhir.

jang to khud hi ek maslaa hai,
jang kyaa maslon ka hal degi;

aag aur khoon aaj bakhshegi,
bhookh aur ehtiyaaj kal degi.

bartaree ke saboot ki khatir,
khoon bahana hi kya zaroori hai?

ghar ki tareeqiyan mitane ko,
ghar jalana hi kya zaroori hai?

Bomb gharon par giren ke sarhad par,
Rooh-e-taameer zakhm khati hai;

Khet apne jalein ke auron ke,
Zeest faaqon mein tilmilati hai.

Tank aage badhe ke peeche hate,
Kokh dharti ki baanjh hoti hai;

Fateh ka jashn ho ke haar ka soug,
Zindagi maiyaton pe roti hai.

Isliye ae shareef insanon,
jang taltee rahe to behtar hai;

aap aur ham sabhi ke aangan mein,
shama jalti rahe to behtar hai.

 

اے شريف انسانو !
(ساحر لدھيانوي)

خون اپنا ہو يا پرايا ہو
نسلِ آدم کا خون ہے آخر
جنگ مشرق ميں ہو کہ مغرب ميں
امنِ عالم کا خون ہے آخر
بم گھروں پر گريں کہ سرحد پر
روح تعمير زخم کھاتی ہے
کھيت اپنے جليں کہ اوروں کے
زيست فاقوں سے تلملاتی ہے
ٹينک آگے بڑھيں، کہ پيچھے ہٹيں
کوکھ دھرتی کی بانجھ ہوتی ہے
فتح کا جشن ہو کہ ہار کا سوگ
زندگی ميتوں پر روتی ہے
جنگ تو خود ہی ايک مسئلہ ہے
جنگ کيا مسئلوں کا حل دے گی
آگ اور خون آج بخشے گی
بھوک اور احتياج کل دے گی
اس ليے اے شريف انسانو !
جنگ ٹلتی رہے تو بہتر ہے
آپ اور ہم سبھی کے آنگن ميں
شمع جلتی رہے تو بہتر ہے
برتری کے ثبوت کی خاطر
خوں بہانا ہی کيا ضروری ہے
گھر کی تاريکياں مٹانے کو
گھر جلانا ہی کيا ضروری ہے
جنگ کے اور بھی تو ميدان ہيں
صرف ميدانِ کشت و خوں ہی نہيں
حاصلِ زندگی خِرد بھی ہے
حاصلِ زندگی جنوں ہی نہيں
آؤ اس تيرہ بخت دنيا ميں
فکر کی روشنی کو عام کريں
امن کو جن سے تقويت پہنچے
ايسی جنگوں کا اہتمام کريں
جنگ، وحشت سے، بربريت سے
امن، تہذيب و ارتقاء کے ليے
جنگ، مرگ آفريں سياست سے
امن، انسان کی بقاء کے لیے
جنگ، افلاس اور غلامی سے
امن، بہتر نظام کي خاطر
جنگ بھٹکي ہوئي قيادت سے
امن، بےبس عوام کي خاطر
جنگ، سرمائے کے تسلط سے
امن، جمہور کي خوشي کے ليے
جنگ، جنگوں کے فلسفے کے خلاف
امن، پُرامن زندگي کے ليے‘

 

3 thoughts on “Ae Shareef Insanon – Sahir Ludhianvi Talks to Those Who Are Still Sane in India and Pakistan

We look forward to your comments. Comments are subject to moderation as per our comments policy. They may take some time to appear.

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s